site
stats
لائف اسٹائل

خطرناک چٹان پر یوگا کرنے والی حیرت انگیز خاتون

اونچی نیچی بلند و بالا خطرناک چٹانوں و پہاڑیوں پر چڑھنا نہایت دل گردے کا کام ہے جو جنون کی حد تک شوق رکھنے والے افراد ہی سر انجام دے سکتے ہیں۔

تاہم ایسی چٹان پر پہنچ کر خطرناک پوز کے ساتھ یوگا کی ورزش کرنا اس سے بھی زیادہ بہادری کا عمل ہے۔

چینی صوبے ہنان میں ایک خاتون یوگی نے بھی بلند ترین چٹان کی چوٹی پر یوگا کر کے سب کو دنگ کردیا۔

سطح سمندر سے 22 سو میٹر بلند لاؤجن نامی اس پہاڑ کو تاؤ مذہب میں ایک خاص اہمیت حاصل ہے۔ اس پہاڑ کو تاؤ مذہب کے بانی سے منسوب کیا جاتا ہے جو ایک معروف چینی فلسفی تھے۔

روایات کے مطابق وہ اس پہاڑ کی غیر ہموار چوٹی پر بیٹھ کر مراقبہ کیا کرتے تھے۔

چین میں اس پہاڑ کا دورہ کرنا مذہبی عقیدت کا ایک حصہ سمجھا جاتا ہے، تاہم اس چینی خاتون یوگی نے اس اونچی نیچی غیر ہموار چٹان پر یوگا کے مشکل پوز انجام دے کر دنیا کو ورطہ حیرت میں ڈال دیا ہے۔

ان کی تصاویر دیکھ کر یوں لگتا ہے جیسے ابھی ان کا توازن بگڑے گا اور یہ نیچے گر پڑیں گی۔

ذرا دل تھام کر ان کی تصاویر دیکھیں۔

یاد رہے کہ چین میں یوگا صرف ایک جسمانی ورزش ہی نہیں بلکہ اسے مذہبی رسومات کا حصہ اور روح کی بالیدگی کا ذریعہ سمجھا جاتا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly
Please follow and like us:

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ [email protected] اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top