site
stats
عالمی خبریں

اسرائیل کی مخالفت پر امریکا یونیسکو باڈی سے دستبردار

واشنگٹن: اقوام متحدہ کے ادارے کی جانب سے اسرائیل مخالف قرار داد سامنے لانے کے بعد امریکا نے اسرائیل کے حق میں بیان دیتے ہوئے یونیسکو کی باڈی سےدستبرداری کا اعلان کردیا۔

امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے اعلامیہ جاری کیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ امریکا یونیسکو کے مبصر مشن سے دستبرداری کا اعلان کرتے ہوئے پیرس کی تنظیم کے ساتھ منسلک ہورہا ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے مؤقف اختیار کیا گیاہے کہ اقوام متحدہ کے ادارے کی جانب سے اسرائیل کی مخالفت کی گئی جو ناقابل برداشت عمل ہے۔

امریکی دستبرداری پر یونیسکو کی سربراہ ارینا بوکووا نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس فیصلے کے گہرے اثرات سامنے آسکتے ہیں کیونکہ امریکا کی جانب سے ادارے کو فنڈنگ بھی مہیا کی جاتی تھی۔ انہوں نے کہا کہ ’امریکا نے یونیسکو کی باڈی سے دستبرداری کا اعلان کیا جو قابلِ افسوس ہے۔

پڑھیں: اسرائیل غاصب ہے‘ تاریخ مسخ نہ کرے‘ یونیسکو کی قرارداد

واضح رہے کہ فلسطینی پارلیمنٹ میں اسرائیل کی غیر قانونی آبادیوں کی تعمیر کے حوالے سے رائے شماری کی گئی جس کے نتیجے کو دیکھتے ہوئے یونیسکو نے اسرائیل کے خلاف اقدامات کیے۔

یہ بھی اطلاعات سامنےآئیں ہیں کہ اقوام متحدہ کا ادارہ یونیسکو اپنے سربراہ کی تبدیلی کا ارادہ رکھتا ہے اور وہ آئندہ کی سربراہی قطر کے سابق وزیرخارجہ کو سونپے گا جس کی وجہ سے امریکا نے باڈی سے دستبرداری کی۔


Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2017 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top