site
stats
ماحولیات

بلوچستان کے ساحلوں پر نایاب وہیل مچھلیوں کی آمد

حب: بلوچستان کے ساحلوں پر نایاب اسپرم وہیل مچھلیوں نے پہنچ کر مقامی آبادی کو خوشگوار حیرت میں مبتلا کردیا۔

اپنے منفرد گول ماتھے کی وجہ سے مشہور نایاب نسل کی یہ وہیل مچھلیاں جنہیں اسپرم وہیل کہا جاتا ہے گزشتہ روز کراچی سے 22 کلومیٹر دور دیکھی گئی تھیں۔

بعد ازاں آج یہ بلوچستان کے ساحلوں سنارا بیچ اور جیوانی میں بھی دیکھی گئیں۔

خاص بات یہ رہی کہ اس نوعیت کی نایاب وہیلوں کو اکثر جال کے ذریعے پانی سے باہر کھینچ لیا جاتا ہے جس کے بعد مردہ وہیلیں مقامی افراد کی تفریح کا ذریعہ بن جاتی ہیں۔

تاہم اس بار کراچی سے لے کر بلوچستان تک جن ماہی گیروں نے اسے دیکھا انہوں نے اس کی حفاظت کی اور اسے نقصان پہنچانے کی کوشش نہیں کی۔

ماہی گیروں اور مقامی افراد نے ان وہیلوں کی تصاویر اور ویڈیوز بھی بنائیں۔

واضح رہے کہ اسپرم وہیل کے دانت تمام وہیل مچھلیوں میں سب سے بڑے ہوتے ہیں اور اسے سب سے بڑی دانتوں والی شکاری مچھلی بھی کہا جاتا ہے۔

یہ اسپرم وہیل کی نسل کے 3 خاندانوں میں واحد قسم ہے جو حیات ہے، بقیہ 2 اسپرم وہیل کی انواع معدوم ہوچکی ہیں۔

یہ وہیل دنیا بھر کے سمندروں میں موجود ہوتی ہے اور افزائش نسل یا موسم کی وجہ سے ایک سے دوسرے سمندر میں ہجرت بھی کرتی ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2017 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top