site
stats
عالمی خبریں

اسپین کی ملکہ خود گاڑی چلا کر بچوں کو اسکول چھوڑنے پہنچ گئیں

ویسے تو دنیا کا ہر بااثر اور دولت مند شخص گاڑی پر سفر کے لیے عموماً اپنے ڈرائیور کا محتاج ہوتا ہے۔ شاید اس لیے بھی کہ گاڑی ڈرائیو کرنا انہیں وقت کا زیاں لگتا ہے چنانچہ وہ پچھلی سیٹ پر آرام سے بیٹھ کر اپنے کاروباری معاملات دیکھتے ہوئے سفر کرتے ہیں۔

ایسا ہی کچھ حال دنیا بھر میں موجود شاہی خاندانوں کا ہے۔ شاہی خاندان کے افراد بھی عموماً اپنے حفاظتی دستوں اور ڈرائیورز کے ساتھ سفر کرتے ہیں۔

تاہم دنیا بدلنے کے ساتھ اب شاہی خاندانوں کے سخت اصول و قوانین میں بھی نرمی آرہی ہے۔ اب شاہی خاندانوں کی نوجوان شہزادیاں اور شہزادے اپنی گاڑیاں بھی خود ڈرائیو کرتے ہیں اور اکثر اوقات اشیائے ضرورت کی خریداری کرتے بھی نظر آتے ہے۔

تاہم اسپین کی ملکہ لٹیزیا نے یہ کام پہلی بار کیا لہٰذا وہ فوراً ہی عالمی میڈیا کی توجہ کا مرکز بن گئیں۔

ملکہ لٹیزیا خود گاڑی چلا کر اپنی 2 پیاری پیاری بچیوں کو اسکول چھوڑنے پہنچ گئیں اور میڈیا نے شاہی محل سے اسکول تک ان کا پیچھا کیا۔

یاد رہے کہ 3 سال قبل ملکہ لٹیزیا نے اس وقت عالمی میڈیا کی توجہ حاصل کی جب ان کے شوہر شہزادہ فلپ ولی عہد سے بادشاہ کے عہدے پر فائز ہوئے۔

شہزادہ فلپ اور لٹیزیا نے سنہ 2004 میں ایک دوسرے کی محبت میں گرفتار ہو کر شادی کی تھی۔ اس وقت لٹیزیا اسپین کے ٹی وی چینل پر بطور رپورٹر اپنے فرائض انجام دے رہی تھیں۔

اسپین کی 44 سالہ ملکہ لٹیزیا اپنے فیشن کے حوالے سے بھی خاصی مشہور ہیں اور عالمی میڈیا اکثر ان کا مقابلہ برطانوی شہزدای کیٹ مڈلٹن سے بھی کرتا ہے۔

یہ ہسپانوی شاہی جوڑا 2 بیٹیوں کے والدین بھی ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2017 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top