site
stats
سائنس اور ٹیکنالوجی

سیارہ مشتری کے ہنگامہ خیز طوفان کی نئی تصاویر جاری

عالمی خلائی ادارے ناسا نے نظام شمسی کے پانچویں اور سب سے بڑے سیارے مشتری کے عظیم اور ہنگامہ خیز طوفان کی نئی تصاویر جاری کردی ہیں جو قدرے قریب سے کھینچی گئی ہیں۔

یہ تصاویر مشتری کے گرد محو سفر خلائی گاڑی جونو نے کھینچی ہیں جو انسانی تاریخ میں پہلی بار اس طوفان کے اس قدر نزدیک سے گزری۔

خلائی گاڑی جونو اس طوفان سے 9 ہزار کلومیٹر بلندی سے گزری اور اس دوران اس نے طوفان کی تصاویر و معلومات اکٹھی کیں۔

ساؤتھ ویسٹ ریسرچ انسٹیٹیوٹ کے سائنسدان اسکاٹ بولٹن کا کہنا ہے کہ کئی سو سالوں سے اس طوفان کا مشاہدہ کیا جارہا تھا اور اس کے بارے میں جاننے کی کوشش کی جارہی تھی۔ ’اب جو ہمارے پاس تصاویر ہیں وہ سب سے بہترین ہیں‘۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ان نئی واضح تصاویر کے ذریعے اس طوفان کے بارے میں مزید بہتر طور پر جاننے میں مدد مل سکتی ہے۔

مشتری کا عظیم طوفان کیا ہے؟

سیارہ مشتری پر ایک غیر معمولی حد تک بڑا سرخ دھبہ موجود ہے جو دراصل مشتری کا وہ عظیم اور ہنگامہ خیز طوفان ہے جسے سائنسدان میگا اسٹورم کا نام دیتے ہیں۔

اس طوفان کا مشاہدہ اس وقت سے کیا جارہا ہے جب سے دوربین ایجاد ہوئی ہے یعنی سترہویں صدی سے۔ اس کا حجم زمین سے بھی بڑا ہے۔

ناسا کے مطابق یہ طوفان 10 ہزار میل کے رقبے پر پھیلا ہوا ہے۔

خلائی گاڑی جونو کا سفر

اگست سنہ 2011 میں لانچ کی جانے والی خلائی گاڑی جونو نظام شمسی کے سب سے بڑے سیارے مشتری کے مشاہدے کے مشن پر ہے جس کے دوران یہ سیارے کی تصاویر و معلومات جمع کرے گی۔

جونو کی رفتار 165 ہزار میل فی گھنٹہ ہے۔ باسکٹ بال گراؤنڈ سائز کی یہ گاڑی شمسی توانائی سے چلتی ہے جس پر 1 ارب 10 کروڑ ڈالر کی لاگت آئی ہے۔

جونو کا یہ مشن فروری 2018 تک جاری رہے گا جس کے بعد جونو مشتری کی فضا کے اندر ہی غوطہ لگا کر تباہ ہوجائے گا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2017 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top