site
stats
اے آر وائی خصوصی

کی بورڈ کی آخری لائن میں کیا بات چھپی ہے؟

کراچی: جدید دور میں انسان کمپیوٹر مشین کا محتاج ہوکر رہ گیا ہے تاہم اس میں چھپی کچھ چیزوں سے ابھی تک بہت سارے لوگ لاعلم ہیں۔

کمپیوٹر مشین کئی حصوں پر مشتمل ہے جن میں سی پی یو، مانیٹر، کی بورڈ اور ماؤس شامل ہیں۔

بیسویں صدی کے آغاز میں کمپیوٹر مشین انتہائی بھاری بھرکم اور پیچیدہ تھی تاہم ماہرین نے وقت کے ساتھ ساتھ اسے مختصر کیا اور آج یہ مشین لیپ ٹاپ کی صورت میں آپ کے سامنے ہے۔

کی بورڈ میں ایک ایسی خاصیت چھپی ہے جس سے شاید آپ اب بھی لاعلم ہوں، بظاہر انگریزی کے بے ترتیب حرفِ تہجی والے اس ٹکڑے میں تقریباً 104 بٹن لگے ہوتے ہیں جن میں انٹر ، شفٹ اور نمبرز بھی شامل ہے ۔

پڑھیں: کی بورڈ کے کارآمد شارٹ کٹس

یہ بھی پڑھیں: کی بورڈ کے سب سے اوپری بٹن کیا کام کرتے ہیں؟

کیا آپ جاتے ہیں کہ کی بورڈ میں موجود انگریزی کے حرفِ تہجی والی ابتدائی دو سطروں سے آپ انگریزی کا کوئی بھی لفظ ٹائپ کرسکتے ہیں تاہم آخری لائن سے انگریزی کا کوئی لفظ ٹائپ نہیں ہوسکتا۔

ابتدائی دو سطروں سے ٹائپ ہونے والے انگلش کے الفاظ

جیسا کہ کی بورڈ کی پہلی الفا بیٹکل رو سے لفظ You, tree, peter اور دیگر الفاظ بن سکتے ہیں اسی طرح دوسری رو سے بھی as, sad اور دیگر الفاظ بن سکتے ہیں تاہم ایسا تیسری لائن سے ممکن نہیں۔

ماہرین کے مطابق اس کی وجہ یہ ہے کہ انگریزی کے حروفِ علت (Vowels A-E-I-O-U-Y)  آخری سطر میں موجود نہیں اور یہ انگریزی زبان کا قانون ہے کہ والوز کے بغیر کوئی لفظ نہیں بن سکتا کم از کم اس میں ایک نہ ایک والوز ضرور موجود ہوگا اور جس لفظ میں پانچ والوز نہیں ہوں گے ان میں y موجود ہوگا جیسا کہ By, Fly, cry وغیرہ۔

کی بورڈ کی آخری سطر میں والوز کی عدم موجودگی کے سبب آپ صرف اس رو کے استعمال سے انگلش زبان کا کوئی بھی لفظ ٹائپ نہیں کرسکتے۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Print Friendly

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ [email protected] اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top