site
stats
حیرت انگیز

نہ پگھلنے والی آئس کریم تیار

اگر آپ آئس کریم کھانے کے شوقین ہیں تو یقیناً آئس کریم کے پگھلنے سے نہایت الجھن میں مبتلا ہوتے ہوں گے جو کھانے کے دوران ہی ہاتھوں اور کپڑوں پر گر کر انہیں خراب کردیتی ہے۔

لیکن اب خوش ہوجائیں، کیونکہ جاپان میں نہ پگھلنے والی آئس کریم تیار کرلی گئی ہے۔

آئس کریم کو برقرار رکھنے والا جز دراصل اتفاقیہ طور پر ایک جاپانی شیف کے ہاتھوں دریافت ہوا۔

جاپانی میڈیا کے مطابق سنہ 2011 میں جب تباہ کن سونامی نے مختلف علاقوں کو اپنا نشانہ بنایا تو وہاں اگنے والی غذائی اشیا بھی اس سے متاثر ہوئیں۔ انہی میں سے ایک اسٹرابیری بھی تھی جو سونامی کے بعد نہایت ہی بدہیئت شکل میں اگنے لگی تھی جسے لوگ خریدنے سے انکار کردیتے۔

مذکورہ جاپانی شیف کو ایسی ہی بدہیئت اسٹرابیریز کے ایک ڈھیر کا استعمال ڈھونڈنے اور انہیں ٹھکانے لگانے کا کام سونپا گیا۔

مزید پڑھیں: امریکی عوام کا بدصورت پھل کھانے سے گریز

جب اس شیف نے ان اسٹرابیریز کو آئس کریم میں شامل کیا تو اس نے دیکھا کہ ان سے بننے والی کریم کافی دیر تک برقرار رہنے کے قابل تھی۔

معاملہ سوشل میڈیا پر پھیلا اور اس پر مزید تحقیق کی گئی تو علم ہوا کہ اسٹرابیریز میں شامل پولی فینول مادہ آئس کریم کو پگھلنے سے روکتا ہے۔

تحقیق میں علم ہوا کہ آئس کریم اس وقت پگھلتی ہے جب فریزر سے نکالتے ہی اس میں شامل پانی اور چکنائی کے اجزا علیحدہ ہونا شروع ہوجاتے ہیں۔ تاہم اسٹرابیریز کی پولی فینول ان دونوں اشیا کو جوڑ کر رکھتی ہے۔

اس جز کو آئس کریم میں شامل کرنے کے بعد یہ آئس کریم نہ صرف گرم موسم میں بھی بغیر پگھلے برقرار رہ سکتی ہے بلکہ ٹھنڈی بھی رہے گی جو گرمی میں فرحت کا احساس دلائے گی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ [email protected] اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top