site
stats
سائنس اور ٹیکنالوجی

ہیکرز کمپیوٹرز کے بعد موبائل انٹرنیٹ کو بھی نشانہ بنا سکتے ہیں، ماہرین کا انتباہ

اسلام آباد : ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ ہیکرز کمپیوٹرز کے بعد موبائل انٹرنیٹ کو بھی نشانہ بنا سکتے ہیں، ہیکنگ سے بچنے کے لئے صارفین احتیاط کریں۔

ماہرین نے انتباہ کیا ہے کہ بڑے بڑے اداروں کے بعد اب عام آدمی کی زندگی بھی سائبرحملوں سے متاثر ہوسکتی ہے، امریکی سیکورٹی ماہرین کا کہنا ہے ڈیڑھ سو ملکوں میں تین لاکھ سے زائد کمپیوٹرز پر وانا کرائے سائبر حملوں کے بعد ہیکرز کا اگلا ہدف موبائل نیٹ ورکس ہوسکتا ہے۔

ماہرین نے بتایا کہ ہیکرز اب تک تو موبائل نیٹ ورکس کی سیکورٹی کو توڑنے میں کامیاب نہیں ہوسکے ہیں لیکن مستقبل میں ایسا ممکن ہے، موبائل صارفین اور انٹرنیٹ یورز کو بہت احتیاط سے کام لینا ہوگا۔

مزید پڑھیں : امریکا سمیت مختلف ممالک میں تاوان کے لیے سائبر حملہ

ماہرین کا کہنا ہے کہ اگرآپ موبائل آلات کا استعمال کر رہے ہیں تو آپریٹنگ سسٹم کو اپ ڈیٹ رکھیں اور قابل اعتماد ذرائع سے موبائل اپلی کیشنز ڈاون لوڈ کریں اور موبائل آلات کے مواد کو محفوظ رکھنے کے لیے سیکیورٹی سافٹ وئیر کا استعمال کیا جائے۔

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں ہیکرز نے پوری دنیا کے ڈیڑھ سو ملکوں پر وانا کرائے سائبر حملوں کے نتیجے میں ہزاروں کمپیوٹرز کو ہیک کر کے تاوان کا مطالبہ کیا تھا، سائبر حملے میں دو لاکھ سے زائد کمپیوٹر متاثر ہوئے تھے۔

سائبر حملے سے بچنے کیلیے بھارت بھر میں سیکڑوں اے ٹی ایمز بند کردیئے گئے تھے جبکہ ریزر بینک آف انڈیا نے بینکوں کو سافٹ ویئراپ ڈیٹ کرنے کے احکامات جاری کئے گئے تھے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2017 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top