site
stats
اہم ترین

قوم شہداء کی قربانیوں کے اعتراف میں یوم آزادی بھرپورطریقےسے منائے، آرمی چیف

کوئٹہ : آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ نے کہا ہے کہ پاک فوج کے جوانوں اور پاکستان کے شہریوں نے پُرامن اور مستحکم پاکستان کے لیے جانوں کے نذرانے دیئے ہیں اس لیے قوم شہداء کی قربانیوں کے اعتراف میں یوم آزادی بھرپور انداز میں منائے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف قمر جاوید باجوہ نے کوئٹہ میں ہونے والے خودکش حملے کے شہید ہونے والے جوانوں کی نمازجنازہ میں شرکت کی اس موقع پر گورنر بلوچستان، وزیراعلیٰ بلوچستان، وزیرداخلہ بلوچستان، کورکمانڈرکوئٹہ سمیت اعلیٰ سول و فوجی حکام کے علاوہ لوگوں کی بڑی تعداد میں موجود تھے۔

بعد ازاں آرمی چیر قمر جاوید باجوہ نے اعلیٰ حکام کے ہمراہ سی ایم ایچ کوئٹہ کا دورہ کیا اور زخمیوں کی عیادت کی اور جوانوں کے حوصلے کی تعریف کی اور اسپتال انتظامیہ کو زخمیوں کو تمام تر طبی سہولیات مہیا کرنے کی ہدایت کی۔

قبل ازیں آرمی چیف کوسدرن کمانڈہیڈ کوارٹرزمیں بریفنگ دی گئی اور دہشت گردی کے واقعے پر تفصیلات سے آگاہ کیا گیا اور دہشت گردوں کے خلاف کی گئی اب تک کی کارروائی سے حوالے سے رپورٹ بھی پیش کی گئی۔

اس موقع پر آرمی چیف کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خاتمے تک دہشت گردی کے خلاف جنگ جاری رہے گی جس کے لیے ریاستی اداروں کومؤثر تعاون اور مربوط منظم بندی کرنے کی ضرورت ہے تاکہ بچے کچے دہشت گردوں کے عزائم کو ملیا مٹ کیا جا سکے

آرمی چیف قمرجاوید باجوہ نے کہا کہ دہشت گردی کے خاتمے کے لیے اداروں کے اقدامات پرمتحد ہو کرعمل کرنے کی ضرورت ہے دہشت گردوں کے یوم آزادی کے جشن کو سبوتاژ کرنے کی کوشش کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان مین جشن آزادی پورے جوش و خراوش سے منایا جائے اور شہداء کی قربانیوں پر خراج تحسین پیش کیا جائے کہ انہوں نے ملک کے استحکام اور امن کے لیے جانیں قربان کیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ رات کوئٹہ میں خود کش حملے کے نتیجے میں 15 افراد شہید اور 25 سے زائد زخمی ہوگئےتھے، شہداء میں 8 فوجی اور 7 سویلین شامل تھے۔


کوئٹہ میں خودکش دھماکا، 8 سیکیورٹی اہلکار اور7 شہری شہید


یاد رہےکہ گزشتہ شب آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کوئٹہ دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے اسے جشن آزادی کی تقریبات کو متاثر کرنے کی کوشش قرار دیا تھا۔

آرمی چیف کا کہنا تھا کہ ایسی کوششوں سے دہشت گردی اور شدت پسندی کے خلاف کارروائیاں متاثر نہیں ہوں گی، یہ کارروائیاں جاری رہیں گی۔

واضح رہے کہ کوئٹہ میں گزشتہ رات ہونے والے خودکش حملےکی تحقیقات جاری ہے تاہم اب تک خودکش دھماکے کا مقدمہ درج نہ ہوسکا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2017 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top