site
stats
صحت

کیلا حیرت انگیز فوائد کا حامل پھل

کیلا روزمرہ زندگی میں استعمال کیا جانے والا ایک عام پھل ہے جو جسم کو فوری طور پر توانائی پہنچانے کا سبب بنتا ہے۔ یہ پھل جسم پر بے شمار مفید اثرات مرتب کرتا ہے۔

ماہرین کے مطابق ایک بہترین ناشتہ وہ ہے جس میں مختلف پھل شامل ہوں، تاہم اگر ناشتے میں کیلوں کا استعمال کیا جائے تو یہ دن بھر چاک و چوبند اور فعال رکھنے کے لیے بہترین غذا ہے۔

ناشتے میں کیلے کا استعمال آپ کی جسمانی غذائی ضروریات کو بھی پورا کرتا ہے اور آپ بے وقت بھوک لگنے کے باعث غیر صحت مند اشیا کھانے سے بچ جاتے ہیں۔

کیلے کی سب سے اہم خاصیت

کیلے میں تین طرح کی قدرتی شکر پائی جاتی ہے۔ سکروز، فروکٹوز اور گلوکوز۔ کیلے میں فائبر یا ریشے بھی موجود ہوتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ کیلے کو فوری توانائی پہنچانے کا ایک اہم ذریعہ سمجھا جاتا ہے۔

banana-2

اس پھل کی اسی اہم خاصیت کے باعث دنیا بھر میں مختلف کھیلوں کے ایتھلیٹس کی خوراک کا یہ لازمی جز ہے۔

کیلے کے حیرت انگیز فوائد

بظاہر معمولی سا نظر آنے والا یہ پھل اپنے اندر حیرت انگیز خواص رکھتا ہے۔

اس کی ایک اور خاصیت فوری طور پر ذہنی دباؤ اور ڈپریشن سے نجات دینا ہے۔

ماہرین کے مطابق کیلے میں موجود ایک عنصر ٹرائپٹوفن ایسا پروٹین ہے جو انسان کو ذہنی سکون دیتا ہے اور انسان کے موڈ کو بہتر بناتا ہے۔

طبی ماہرین کی تجویز ہے کہ ڈپریشن کا شکار افراد کیلے کو اپنی خوراک کا حصہ بنا لیں۔ یہ فوری طور پر بھی دماغی اعصاب کو سکون پہنچاتا ہے جبکہ اس کا مستقل استعمال دماغ خلیات کو آرام دہ بناتا ہے۔

shake

کیلا انسانی ذہن کی کارکردگی میں بھی اضافہ کرتا ہے۔

اس میں موجود آئرن یا فولاد جسم میں ہیمو گلوبن میں اضافہ کرتا ہے جو نیند لانے میں مدد گار ثابت ہوتا ہے۔

کیلے میں پایا جانے والا پوٹاشیئم بلڈ پریشر کو معمول کے مطابق رکھتا ہے جبکہ یہ فالج کے خطرے سے بھی بچاتا ہے۔

حاملہ خواتین یا ایسے افراد جو صبح اٹھنے کے بعد اپنی طبیعت گری گری محسوس کرتے ہیں، ناشتے میں لازمی طور پر کیلے کا استعمال کریں۔ کیلا ان کے اس مرض مارننگ سکسنیس کو قابو میں رکھے گا۔

کیلا دماغ میں ٹیومر کے خلیات کی افزائش اور انہیں جان لیوا بننے سے روکتا ہے۔

یہ حیرت انگیز پھل گردے کے سرطان، ذیابیطس اور نابینا پن سے بچاؤ میں بھی مدد گار ہے۔

تو پھر آج ہی سے کیلے کا استعمال شروع کردیں۔ لیکن یاد رہے کہ رہے کہ یہ استعمال اعتدال کے اندر ہونا چاہیئے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly
Please follow and like us:

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ [email protected] اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top